کوئٹہ دھماکے میں جاں بحق افراد کی تعداد 16 ہوگئی

کوئٹہ کے علاقے ہزارگنجی کی فروٹ منڈی میں ہونے والے دھماکے میں ہوا ہے جس میں جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 16 ہوگئی ہے.
پولیس کے مطابق دھماکے کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی ہوئے ہیں، پولیس اور ریسکیو ٹیمیں دھماکے کی جگہ پہنچ گئی ہیں ، امدادی کام جاری ہیں۔
ڈی آئی جی کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ نے دھماکے کے نتیجے میں 16 افراد کے جاں بحق اور 30 کے زخمی ہونے کی تصدیق کی ہے۔
انہوں نے بتایا ہے کہ دھماکے کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والے 8 افراد کا تعلق ہزارہ کمیونٹی سے ہے۔
سیکیورٹی فورسز نے دھماکے کی جگہ کو گھیرے میں لے لیا ہے اور کسی کو دھماکے کے مقام کے قریب نہیں جانے دیا جا رہا ہے تاکہ امدادی کاموں میں رکاوٹ پیش نہ آئے۔
لاشوں اور زخمیوں کو بولان میڈیکل کمپلیکس منتقل کر دیا گیا ہے،دونوں اسپتالوں میں ایمرجنسی صورت حال نافذ کر دی گئی ہے جبکہ ہلاکتوں میں اضافے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔
دھماکے کے نتیجے میں قریبی عمارتوں کو بھی نقصان پہنچا ہے، فوری طور پر دھماکے کی نوعیت سامنے نہیں آسکی ہے
وزیر مملکت برائے داخلہ شہریارخان آفریدی نےکوئٹہ ہزار گنجی میں دہشتگرد دھماکے کی شدید مذمت کی انہوں نے آئی جی بلوچستان کو دہشت گردی کے واقعے پر تفصیلی طور پر رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی اور ان کا کہنا تھا کہ دہشت گرد شکست کھانے کے بعد اب مسلمانوں کو تقسیم کرنے کی سازش پر عمل پیرا ہیں۔
ہم فرقہ پرست دشمن کی قوم کو تقسیم کرنے کی سازش کو ایک بار پھر ناکام بنائیں گے۔ جمعہ کے مبارک دن مسلمانوں پر حملہ آور کبھی مسلمان نہیں ہوسکتے۔

Comments
Loading...