بھارت کی جانب سے پاکستان میں دہشت گردی کا خطرہ ہے .وزیر اعظم

اپوزیشن احتجاج کرنا چاہتی ہے تو ڈی چوک پر کنٹینر فراہم کرنے کو تیار ہیں

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ یوم پاکستان پر مودی کا خیرسگالی پیغام ملا، لیکن ابھی چوکنا رہنا ہوگا، بھارت کی جانب سے پاکستان میں دہشت گردی کا خطرہ ہے . نواز شریف کو کس قانون کے تحت بیرون ملک جانے کی اجازت دی جائے، نواز شریف کے لئے کوئی الگ سے قانون نہیں لا سکتے.

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے سینئر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی انتخابات سے قبل پاک بھارت تعلقات میں بہتری کی امید نہیں، یوم پاکستان پر مودی کا خیرسگالی پیغام ملا، لیکن ابھی چوکنا رہنا ہوگا، بھارت کی جانب سے پاکستان میں دہشت گردی کا خطرہ ہے.

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن احتجاج کرنا چاہتی ہے تو ڈی چوک پر کنٹینر فراہم کرنے کو تیار ہیں، ہم نے 126 دن دھرنا دیا، دیکھتے ہیں اپوزیشن کتنے دن گزارتی ہے، اپوزیشن سوائے اپنی کرپشن بچانے اور بلیک میل کے اسمبلی میں کوئی اور بات نہیں کرتی۔ انہوں نے کہا اپوزیشن احتجاجی تحریک نہیں چلا سکتی، عوام ان کی کرپشن بچانے کے لئے باہر نہیں نکلیں گے۔

وزیر اعظم نے مزید کہا کہ اپوزیشن نے نیب زدہ شخص کو پی اے سی چیئرمین بنوایا، نیب خود مختار ادارہ ہے، حکومت کے زیر اثر نہیں، پاکستان کی اس وقت کی خارجہ پالیسی گزشتہ 20 سال میں سب سے بہتر ہے، سعودی عرب، یو اے ای، ملائیشیا، ترکی اور چین سے بہترین تعلقات ہیں۔ انہوں نے کہا ہمیشہ ڈو مور کا مطالبہ کرنے والا امریکا ہماری تعریف کر رہا ہے، امریکا سمجھتا ہے کہ ہم افغانستان میں قیام امن کیلئے کردار ادا کرسکتے ہیں۔

Comments
Loading...