اسرائیل نے مسجد کو شراب خانے میں تبدیل کر دیا

لندن کے ایک معروف اخبار کے مطابق اسرائیلی میونسپلٹی نے سافید میں الاحمر مسجد کو شراب خانے اور ایونٹس ہال میں تبدیل کر دیا. جہاں شراب، ناچ گانے کے علاوہ سب ہو سکتا ہے لیکن مسلمان نہیں جا سکتے اور نا ہی نماز ادا کر سکتے ہیں.
یہ فلسطین کی تاریخی مساجد میں سے ایک مسجد ہے جو 1948 میں یہودیوں کے قبضے میں چلی گئی تھی. نائٹ کلب میں بدلنے سے پہلے اسے سکول اور الیکشن کمپینز کیلئے استعمال کیا جاتا رہا لیکن اب نائٹ کلب میں تبدیل کر دیا گیا ہے.
فلسطینی مسلمانوں نے اسے دوبارہ مسجد بنانے کی درخواست دی ہے لیکن تاحال عدالت نے کوئی فیصلہ نہیں دیا. سافید مسلمانوں کا علاقہ تھا جہاں سے 12000 مسلمانوں کو انکے گھروں سے زبردستی بے دخل کر دیا گیا تھا.

Comments
Loading...