فیصل آباد سات سالہ بچے کی فائرنگ سے ماں جاں بحق ،واقعہ میں نیا موڑ آ گیا

خاتون کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ حنا اپنے بیٹے کے ہاتھوں غلطی سے گولی کا نشانہ نہیں بنی بلکہ حنا کو اس کے شوہر رضوان نے مارا ہے۔

فیصل آباد میں 7 سالہ بچے سے پستول چل گیا، گولی لگنے سے ماں جاں بحق ہو گئی. اس واقعے میں نیا موڑ آ گیا. جان بحق خاتون کے رشتے داروں کے شوہر پر الزام عائد کرنے کے بعد پولیس نے شوہر کو حراست میں لے لیا.

فیصل آباد تھانہ جھنگ بازار کے علاقے میں 7 سالہ بچے سے غلطی سے پستول چل گیا جس کے نتیجے میں ماں جاں بحق ہوگئی۔

والد نے پولیس کو بیان دیا کہ پستول لوڈ رکھی تھی کہ اذان نے کھلونا پستول سمجھ کر ماں پر تان کر گولی چلا دی۔ 26 سالہ حنا فاطمہ کو اسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ راستے میں ہی دم توڑ گئی۔ پولیس نے شوہر کے بیان و حالات کے علاوہ تمام پہلوؤں سے تحقیقات شروع کردی ہیں. شوہر رضوان نے کہا ہے بیٹے سے غلطی سے گولی چلی.

اہم اب بچے کے ہاتھوں گولی لگنے سے ماں کے قتل کا معاملہ نیا رخ اختیار کر گیا ہے اور خاتون کے قتل کا شک ان کے اپنے شوہر پر جا رہا ہے۔
خاتون کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ حنا اپنے بیٹے کے ہاتھوں غلطی سے گولی کا نشانہ نہیں بنی بلکہ حنا کو اس کے شوہر رضوان نے مارا ہے۔ خاتون کی بہن کا کہنا تھا کہ حنا کا شوہر اس پر ظلم کرتا تھا اور ایک سال قبل بھی اس پر فائرنگ کی تھی جس کے بعد وہ خوفزہ ہو کر میرے گھر آ گئی تھی۔
پولیس نے خاتون کے شوہر کو حراست میں لے لیا ہے اور تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔

تاہم خاتون کے شوہر کا کہنا ہے کہ وہ سو رہا تھا اور فائرنگ کی آواز سے آنکھ کھلی جب اٹھا تو بیوی کو خون میں لت پت پایا۔جس پر بڑے بیٹے نے بتایا کہ چھوٹے بھائی کے ہاتھوں پستول سے گولی چل گئی جس سے والدہ جاں بحق ہو گئیں۔

Comments
Loading...