لیڈی ڈاکٹرز کو ہراساں کرنے پر ینگ ڈاکٹرز کا احتجاج

تفصیلات کے مطابق رحیم یارخان میں لیڈی ڈاکٹرز کو ہراساں کرنے پر ینگ ڈاکٹرزطنےسرکاری ہسپتالوں کی اوپی ڈیز کو تالےلگادئیے۔۔۔

جس طرح سے خدمت انسانی ہر انسان کا فرض ہے اور چونکہ ڈاکٹرز کو اس لحاظ سے فرشتہ صفت انسان مانا جاتا ہے جو اپنی قیمتی گھڑیوں کو وقف کر کے صرف اور صرف اپنا تمام وقت لوگوں کی بھلائی کے لئے گزارتے ہیں۔۔۔اسی طرح حال ہی میں ایک پیش۔آنے والا واقعہ بیان کرتے ہیں۔۔

لاہورسمیت صوبہ بھر کے سرکاری ہسپتالوں میں ینگ ڈاکٹرز کا احتجاج جاری رہا۔۔۔

لاہور میں سروسز،پی آئی سی،جناح اورجنرل ہسپتال کی اوپی ڈیزکو بھی تالے لگا دیے گئے۔ ینگ ڈاکٹرزطنے لیڈی ڈاکٹرز کو ہراساں کرنےکےخلاف شدید نعرےبازی کی۔۔۔

ینگ ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ ہراساں کرنے کے خلاف قانون سازی تک احتجاج جاری رہےگا۔۔۔

افسوسناک واقعہ کے ملزم کو پہلے ہی گرفتار کیا جاچکا ہے۔ سیالکوٹ سے نمائندہ خصوصی کے مطابق رحیم یار خان میں خاتون ڈاکٹر سے زیادتی کی کوشش کے خلاف ینگ ڈاکٹر کا شدید احتجاج، گورنمنٹ سردار بیگم ٹیچنگ ہسپتال میں ڈاکٹروں کی بھرپور شرکت۔۔۔

علامہ اقبال ٹیچنگ میموریل ہسپتال کے ینگ ڈاکٹرز نے گورنمنٹ سردار بیگم ٹیچنگ ہسپتال میں بازوؤں پر سیاہ پٹیاں باندھ کر شدید احتجاج کیا۔۔۔

ینگ ڈاکٹرز کا کہنا تھا کہ ہم کام کرنا نہیں چھوڑیں گے تاہم احتجاج ہمارا حق ہے۔ ینگ ڈاکٹر کے ساتھ مریضوں کے لواحقین نے بھی پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جس پر تحفظ دینے سمیت مختلف نعرے درج تھے۔۔۔

ڈاکٹر کے ساتھ مریضوں کے لواحقین نے بھی احتجاج میں بھرپور شرکت کی اور تحفظ کا مطالبہ کیا۔ ینگ ڈاکٹرز اوسی ایشن پنجاب کی قیادت کی اپیل پر وائی ڈی اے سرگودھا نے ڈی ایچ کیو ہسپتال میں او پی ڈی بند کر کے ہڑتال کی جس سے دور دراز سے آنے والے مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔۔۔

تفصیلات کے مطابق وائی ڈی اے پنجاب کی اپیل پر پنجاب کے دوسرے شہروں کی طرح گورنمنٹ ڈسٹرکٹ ٹیچنگ ہسپتال سرگودھا میں ینگ ڈاکٹرز نے شیخ زاہد ہسپتال، رحیم یار خان میں لیڈی ڈاکٹر کو ہراساں کرنے کے واقع کیخلاف او پی ڈی بند کر کے ہڑتال کر دی، جس سے مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔۔۔

وائی ڈی اے سرگودھا کے چیئر مین ڈاکٹر عثمان امتیاز، صدر ڈاکٹر واجد علی کانجو و دیگر ڈاکٹروں کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر عدم تحفظ کا شکار ہو کر رہ گئے ہیں، رحیم یار واقع میں ملوث غفلت و لا پرواہی کے مرتکب افسران کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا جائے اور پنجاب بھر میں ڈاکٹروں کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے واضح پالیسی بنائی جائے۔۔۔

ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ٹوبہ ٹیک سنگھ کے ینگ ڈاکٹرز نے مکمل ہڑتال کی ،ڈاکٹرز نے اپنے فرائض سر انجام نہیں دئیے اور مریضوں کا معائنہ نہ کرنے کے باعث ضلع کے دور دراز علاقوں سے علاج معالجہ کیلئے آنے والے مریض اور ان کے لواحقین ذلیل و خوار ہوتے رہے۔۔!!

Comments
Loading...