لیڈز ٹیسٹ میں پاکستان کو اننگز اور 55 رنز سے شکست

انگلینڈ نے لیڈز ٹیسٹ میں پاکستان کو ایک اننگز اور 55 رنز سے شکست دی ہے۔

پاکستان سے پہلے ٹیسٹ میچ میں شکست کے بعد زبردست واپسی کرتے ہوئے انگلینڈ ٹیم نے پاکستان کو تین دن میں ڈھیر کردیا۔

لیڈز کے ہیڈنگلے گراونڈ میں انگلش بالرز نے دوسرے اور آخری ٹیسٹ میچ میں پاکستانی بلے بازوں کو بلکل سنبھلنے نہیں دیا اور پورے میچ میں پاکستان کی کمزور بیٹنگ کو نشانہ بنایا۔

پاکستان کی دوسری اننگز میں ماسوائے عثمان صلاح الدین اور امام الحق کے کوئی بھی بیٹسمین جارحانہ انگلش بولنگ کا سامنا نہیں کرپایا۔

دن کے آغاز میں جیمز اینڈرسن اور سٹورٹ براڈ کی سیم بالنگ نے پاکستانی بیٹسمینوں کے لیے پہلے ہی مشکلات کھڑی کی ہوئی تھیں۔

دونوں بالرز نے اظہر علی، حارث سہیل اور اسد شفیق کو سنبھلنے نہیں دیا اور ابتدا سے ہی ایکسٹرا باؤنس کی مدد سے پاکستانی بل بازوں کو کنٹرول میں رکھا۔

اظہر علی نے جب دو چوکوں کے ساتھ اننگز کی شروعات کی تو وہ پراعتماد نظر آئے، تاہم وہ جیمز اینڈرسن کی سیدھی آتی گیند کو سمجھ نہیں پائے اور بولڈ ہوگئے۔

نئے آنے والے کھلاڑی حارث سہیل نے جیمز اینڈرسن کی اوپر اچھلتی ہوئی گینڈ پر کوور ڈرایو مارنے کی کوشش کی لیکن نوجوان کھلاڑی ڈومینیک بیس نے ہوا میں چھلانگ لگا کر ذبردست ڈائیونگ کیچ پکڑا۔

اسد شفیق کو امپائر نے سٹورٹ براڈ کی گیند پر کیپر کے ہاتھوں کیچ ہونے کے بعد ناٹ آوٹ دیا گیا۔ تاہم انگلینڈ کے ریویو لینے کے بعد امپائر کو اپنا فیصلہ بدلنا پڑا۔

جس کے بعد پاکستان کے پر تین کھلاڑی آوٹ 42 ہوگئے تھے۔

کھانے کے وقفے کے کچھ دیر بعد تک عثمان صلاح الدین نے امام الحق کے ساتھ شراکت میں 42 رنز بنائے تھے اور ایک وقت پر ایسا لگ رہا تھا کہ دونوں بلے باز

کسی بڑی پارٹنرشپ کی طرف بڑھ رہے ہیں۔

تاہم نوجوان سپنر ڈومینک بیس نے اپنے پہلے اوور میں امام الحق کی وکٹ لے کر پاکستان کو مزید دباؤ میں ڈال دیا۔

امام الحق 34 رن بنا کر بیس کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوئے۔

کپتان سرفراز احمد اور پہلی اننگز میں پاکستان کی طرف سے سب سے زیادہ رن بنانے والے شاداب خان بھی زیادہ دیر کریز پر نہ ٹک سکے اور صرف 18 رن کے اضافے کے بعد دونوں بیٹسمین پویلین واپس چلے گئے۔

شاداب کی وکٹ کیورین نے لی جب کہ سرفراز کو ووکس نے ایل بی ڈبلیو کیا۔

کچھ ہی دیر بعد فہیم اشرف ڈومینیک بیس کی گیند پر غیر ضروری شاٹ کھیل کر 3 رن بنا کر آؤٹ ہوگئے۔

مجموعی سکور میں چار رنز کے اضافے کے بعد عثمان صلاح الدین 34 رن بنا کر بیس کی گیند پر انگلش کپتان روٹ کے ہاتھوں کیچ ہوگئے۔۔جس کے بعد پاکستان کی اننگز کی شکست سے بچنے کے آخری امید ختم ہوگئی۔

تھوڑی ہی دیر بعد بیس کو پہلی ہی گیند پر چھکا مارنے والے حسن علی 9 رن بنا کر براڈ کی گیند پر سلپ میں کک کے ہاتھوں کیچ ہوئے اور محمد عباس کی وکٹ کے براڈ حصے میں آئی۔

اس میچ کی ایک خاص بات سٹورٹ براڈ ہیں جنھوں نے اسد شفیق کی وکٹ لے کر وسیم اکرم کا 414 وکٹوں کا ریکاڈ توڑ دیا ۔ وہ اب ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے 13ویں بالر بن گئے ہیں۔

پاکستان کا اگلا میچ اب 12 جون کو سکاٹ لینڈ کے ساتھ ہوگا۔ دو ٹی ٹوینٹی میچوں کی سرییز کا یہ پہلا میچ ایڈنبرا میں کھیلا جائے گا۔

Source BBC
Comments
Loading...