سکاٹ لینڈ موسم الرٹ؛ ۷۵ میل فی گھنٹے کے حساب سے طوفانی ہوایں

گلاس گو اور ایڈنبرگ میں طوفانی ہواوں نے رخ کر لیا۔ لوگوں کو گھروں میں قیام کرنے کی ہدایات دے دی گئ ہیں ۔ میٹ آفس کے مطابق طوفان کا رخ اب یونائیٹد کینگڈم اور آئرلینڈ کی طرف ہے۔  اس طوفان کی وجہ سے ڈھیروں درخت زمین بوز ہو چکے ہیں۔ اور کئ عمارات کو بھی نقصان پہنچا ہے۔ اٹلانٹک طوفان کی وجہ بھی سکاٹ لینڈ میں طوفانی ہواوں کو بتایا جاتا ہے۔
طوفان “ہیلین” بھی یوکے میں چلنے والی ہواوں کے باعث ہے۔ ابتداء میں طوفان کی رفتار ۷۰ میل فی گھنٹا تھی اور یوکے میں داخل ہونے کے بعد رفتار ۴۰ میل فی گھنٹا ہو گئ۔ اس طوفان کے باعث یوکے کی مغربی کوسٹ کو کافی نقصان پہنچا ہے اور یوکے کی جزیروں کو بھی۔ اس طوفان کو ۱۹۸۷ میں آنے والے طوفان سے تشبیح دی جا رہی ہے۔

اس طوفان کی فورکاسٹ پہلے ہی کر دی گئ تھی۔ لوگوں کو اس کے خطرناک عناصر سے پہلے ہی مطلع کر دیا گیا تھا۔ میٹ آفس والوں نے اور قومی طوفان کے بچاوء کے مرکز جو امریکہ میں واقع ہے، پہلے ہی آگاہ کر دیا تھا کے بجلی جانے کا خطرہ اور تعمیراتی نقصان ہونے کے خدشہ ہے۔

موسمی فورکاسٹ کے مطابق، لوگوں کو صبح ۸ بجے سے لے کر شام ۶ بجے تک متنبہ کیا گیا تھا۔ ہوا میں اڑنے والی ریت اور مٹی بھی کوگوں کے لیے نقصان کا باعث ہو سکتی ہے۔ اس طوفان کو وقتی نام دیا گیا ہے جو کہ “طوفان علی” ہے اور اس کو اول درجے کا طوفان بتایا جا رہا ہے۔ لوگوں کو حفاظتی تدابیر اختیار کرنے کی سخت تلقین کی جا رہی ہے، یونائٹڈ کنگڈم کی طرف سے۔

Comments
Loading...